کھلی آنکھ میں سپنا جھانکتا ہے

Dark

Darknes will Fall
VIP
Jun 21, 2007
28,878
12,573
1,313
کھلی آنکھ میں سپنا جھانکتا ہے


کھلی آنکھ میں سپنا جھانکتا ہے
وہ سویا ہے کہ کچھ کچھ جاگتا ہے

تری چاہت کے بھیگے جنگلوں میں
مرا تن، مور بن کر ناچتا ہے

مجھے ہر کیفیت میں کیوں نہ سمجھے
وہ میرے سب حوالے جانتا ہے

میں اس کی دسترس میں ہوں، مگر وہ
مجھے میری رضا سے مانگتا ہے

کسی کے دھیان میں ڈوبا ہوا دل
بہانے سے مجھے بھی ٹالتا ہے

سڑک کو چھوڑ کر چلنا پڑے گا
کہ میرے گھر کا کچّا راستہ ہے

پروین شاکر
 
  • Like
Reactions: nrbhayo
Top