Jab Raat Ke Tanhayi

saj_killer

Newbie
Jul 23, 2008
90
68
0
33
جب رات کی تنہائی دل بن کے دھڑکتی ہے


یادوں کے دریچوں میں چلمن سی سرکتی ہے

یُوں پیار نہیں چھپتا ، پلکوں کے جھکانے سے
آنکھوں کے لفافوں میں تحریر چمکتی ہے

خوش رنگ پرندوں کے لوٹ آنے کے دن آئے
بچھڑے ہوئے ملتے ہیں جب برف پگھلتی ہے

لوبان میں چنگاری جیسے کوئی رکھ جائے
یوں یاد تری شب بھر سینے میں سُلگتی ہے

شہرت کی بُلندی بھی پل بھر کا تماشا ہے
جس ڈال پہ بیٹھے ہو، وہ ٹوٹ بھی سکتی ہے
 
Top